ابھی آنے والا ہے Sun 6:00 PM  AEST
ابھی آنے والا ہے شروع ہوگا 
Live
Urdu radio
ایس بی ایس اردو

کووڈ ۱۹ کے دوران آسٹریلیا کے 47 ارب پتیوں کی دولت میں دوگنا اضافہ

Aussie billionaires are getting richer during pandemic Source: The Image Bank RF

آسٹریلیا کے 47 ارب پتیوں کی دولت میں تقریباً 205 ملین ڈالر یومیہ اضافہ ہورہا ہے۔ یہاں تک کہ اگر یہ چند افراد اپنی دولت کا 99 فیصد کھو دیتے ہیں، تب بھی وہ عالمی آبادی کے 99 فیصد افراد سے زیادہ امیر رہیں گے۔

کووڈ ۱۹ کی عالمگیر وبا کے دوران جہاں کروڑوں لوگوں نے مالی نقصانات اٹھائے ہیں، وہیں دنیا کے امیر ترین افراد کے مالیاتی خزانوں میں بے پناہ اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

ایک نئی رپورٹ کے مطابق آسٹریلیا کے 47 ارب پتیوں نے کووڈ ۱۹ کے پہلے دو سالوں میں اپنی دولت کو دوگنا کر کے ۲۵۵ بلین ڈالر تک پہنچا دیا ہے۔ جسکا مطلب ہے کہ یہ افراد فی سیکنڈ ۲۳۰۰ ڈالر کی شرح سے کما رہے ہیں۔

امدادی گروپ آکسفام کی حالیہ شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق معاشرے میں بڑھتی ہوئی اس عدم مساوات کو عالمی سطح پر بھی دیکھا جارہا ہے۔

رپورٹ کے مطابق ان افراد کی دولت میں اضافہ پراپرٹی اور اسٹاک مارکٹ میں تیزی کے باعث ہورہا ہے۔

آکسفام کی ڈاریکٹر آف پروگرامز انتھیا سپنکس کا اس بارے میں کہنا ہے کہ آسٹریلیا کے 47 ارب پتیوں کی دولت میں تقریباً 205 ملین ڈالر یومیہ اضافہ ہورہا ہے۔ یہاں تک کہ اگر یہ چند افراد اپنی دولت کا 99 فیصد کھو دیتے ہیں، تب بھی وہ 99  فیصدعالمی آبادی سے  زیادہ امیر رہیں گے۔

رپورٹ کے مطابق اگر دنیا میں دولت کی عدم مساوات اسی طرح بڑھتی رہی تو اس سے ہر سال ہزاروں اموات کا خطرہ ہے جس کی وجوہات میں صحت کے ذرائع تک رسائی ، جنسی تشدد میں اضافہ اور بھوک شامل ہیں۔

اسی لیے آکسفام دنیا کی حکومتوں جن میں آسٹریلوی حکومت بھی شامل ہے سے امیر افراد پر زیادہ سے زیادہ ٹیکس لگانے کی استدعا کر رہا ہے۔

آسٹریلین کونسل آف سوشل سروس کی چیف ایگزیکیٹو کیسنڈرا گولڈی نے اس بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں عام افراد کو سماجی تحفظ مہیا کرنے کیلیے اپنی حکومت کی آمدنی بڑھانا پڑے گی۔

دوسری جانب چند ماہرین کا کہنا ہے کہ وفاقی انتخابات نزدیک ہونے کے باعث اس بات کے قصیر امکانات ہیں کہ سیاستدان ٹیکسوں میں اضافے کے بارے میں سوچیں۔ البتہ انھیں ایسی پالیسیوں کے بارے میں ضرور سوچنا چاہیئے جس سے دولت کی عدم مساوات میں کمی لائی جاسکے۔

اسی بارے میں اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے آسٹریلین نیشنل یونیورسٹی کرافرڈ سکول آف پبلک ہیلتھ کے پروفیسر پیٹر وائٹ فرڈ نے عمر رسیدہ افراد کی نگہداشت کے اداروں میں سرمایہ کاری کرنے پر زور دیا۔


 

پوڈ کاسٹ سننے کے لئے نیچے دئے اپنے پسندیدہ پوڈ کاسٹ پلیٹ فارم سے سنئے 

Coming up next

# TITLE RELEASED TIME MORE
کووڈ ۱۹ کے دوران آسٹریلیا کے 47 ارب پتیوں کی دولت میں دوگنا اضافہ 20/01/2022 1:03:15 ...
'فوٹی' کیا ہے؟ آسٹریلین کھیل کے بارے میں وہ سب کچھ جو آپ جاننا چاہتے ہیں 18/05/2022 22:00 ...
امیگرنٹ خواتین عملی سیاست سے دور کیوں 17/05/2022 15:07 ...
ایس بی ایس اردو خبریں 17 مئی 2022 17/05/2022 05:13 ...
پاکستانی کمیونیٹی آسٹریلیا کے وفاقی انتخابات کے بارے میں کیا سوچتی ہے؟ 17/05/2022 45:08 ...
ایس بی ایس اردو خبریں 16 مئی 2022 16/05/2022 00:03 ...
سابق آسٹریلین کرکٹر اینڈریوں سائیمنڈس کی کار حادثے میں ہلاکت پر کرکٹ کی دنیا سوگوار 15/05/2022 00:07 ...
تارک وطن خواتین ووٹ دیتے ہوئے کیا سوچتی ہیں ؟ 15/05/2022 07:00 ...
ہاؤسنگ سکیمز کا انتخابی نتائج پر کیا اثر پڑے گا؟ 15/05/2022 00:07 ...
ایس بی ایس اردو خبریں 12 مئی 2022 12/05/2022 03:48 ...
View More