ابھی آنے والا ہے Wed 6:00 PM  AEST
ابھی آنے والا ہے شروع ہوگا 
Live
Urdu radio

مجھےگھر یاد آتا ہے ۔۔۔۔۔ سرحدیں کھلنے سے پہلے ہی ٹکٹ بک کروالیئے ہیں ۔

Source: Unsplash_Jeshoots.com

وزیر اعظم اسکاٹ موریسن کی جانب سے گذشتہ ماہ ،نومبر تک بین الاقوامی سرحدیں کھلولنے کے اعلان کے بعد آسٹریلیا میں مقیم تارکین وطن میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے ۔ اگرچہ ابھی سرحدیں کھلنے میں پورا ایک ماہ باقی ہے لیکن کچھ لوگوں نے قبل از وقت ہی ٹکٹ بک کروا لئے ہیں ۔

پاکستان کے لئے کم ائیر لائینز آپشن اور طلب میں اضافہ ٹکٹ مہنگے ہونے کی اہم وجہ ہے۔

موجودہ حالات میں بہتر یہ ہے کہ "فلیکسی ٹکٹ "  بک کروایا جائے ۔

وزیر اعظم کی جانب سے سرحدیں کھولنے کا بیان سامنے آتے ہی لوگ ٹکٹس سے متعلق معلومات حاصل کر رہے ہیں ۔


 

 عالمی وبا کے آسٹریلیا میں داخل ہونے کے بعد ، ملک میں موذی مرض کے پھیلاو کو روکنے کے لئے مارچ 2020 میں آسٹریلین حکومت نے سرحدوں پر پابندی نافذ کر دی تھی ۔ جس کے بعد آسٹریلین شہری اور مستقل رہائش رکھنے والے افراد کو آسٹریلیا سے باہر جانے کے لئے استثنیٰ کی ضرورت تھی ۔

رواں سال آسٹریلیا میں ویکسین لگانے کا عمل شروع ہونے کے بعد سے بہت سے تارک وطن اس انتظار اور امید میں تھے کہ حکومت کی جانب سے سرحدیں  کھولنے سے متعلق کیا فیصلہ سامنے آتا ہے ۔ گذشتہ ماہ وزیر اعظم کی جانب سے اعلان کیا گیا کہ نومبر سے ایسی ریاستوں کے لئے بین الاقوامی پروازیں کھول دی جائیں گی جہاں ویکسین کی شرح 80 فیصد کا ہدف پورا ہو جائے گا اور پروازوں کا آغآز نیو ساوتھ ویلز سے کیا جائے گا ۔ یاد رہے کہ تا دم تحریر نیو ساوتھ ویلز میں ویکسین کی پہلی خوراک کی شرح 90 فیصد ہو گئی ہے ۔

Scott Morison
Prime Minister Scott Morrison addresses media during a press conference in Sydney, Tuesday, April 27, 2021. (AAP Image/Dan Himbrechts) NO ARCHIVING
AAP Image/Dan Himbrechts

یہ اعلان سامنے آتے ہی بہت سے پاکستانیوں نے بین الاقوامی پروازیں کھلنے سے قبل ہی پاکستان کے لئے ٹکٹوں کی بکنگ شروع کردی ہے ۔ نیو ساوتھ ویلز کی رہائشی اسماء یاسر بھی ایسے ہی لوگوں میں شامل ہیں ۔ اسماء نے اپنے اور اپنے اہل خانہ کے لئے آئندہ ماہ کے ٹکٹ بک کروائے ہیں ۔ اسماء کا کہنا ہے کہ حالات کی اصل شکل سامنے نہ ہونے کی وجہ سے فی الوقت انہوں نے ون وے ٹکٹ بک کروایا ہے ۔ اسماء کا کہنا ہے کہ یک طرفہ ٹکٹ بک کروانے کی ایک وجہ ٹکٹوں کی قیمت میں بہت زیادہ اضافہ ہے ۔

ہم نے اپنا ون وے ٹکت لیا ہے جس کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ واپسی کے ٹکٹ بہت زیادہ مہنگے ہیں اور دوسری وجہ یہ ہےکہ ٹکٹس دستیاب ہی نہیں ہیں خاص کر اکانومی کلاس کے ۔

تاہم اسماء کا کہنا ہے کہ اس وقت کے منصوبے کے مطابق نومبر کے آخر میں سڈنی کے ہوائی اڈے سے پرواز کریں گی اور جنوری کے اوائل میں واپس آجائیں گی ۔

اسماء کاکہناہے کہ ٹکٹ کی قیمتیں بہت زیادہ ہیں اور جودو طرفہ ٹکٹ پہلے پانچ سے چھ ہزار ڈالر میں آجاتے تھے اب وہی قیمت یک طرفہ ٹکٹ کہ ہے ۔

دوسری جانب میلبرن میں اپنے شوہر کے ہمراہ ٹریول ایجنسی چلانے والی سائرہ میاں کہتی ہیں کہ کووڈ-19 کے باعث لاک ڈاون نے جس صنعت کو سب سے زیادہ نقصان پہچایا وہ سفر سے متعلق تھی ۔ انہوں نے کہا کہ ہم آسٹریلیا میں حج و عمرہ پیکجز شروع کرنے والے پہلے ٹریول ایجنٹ تھے لیکن گذشتہ سال کرونا وائرس کے باعث دو سالوں سے کوئی عمرہ یا حج پر نہ جا سکا اور آمدنی صفر رہی ۔ انہوں نے کہا کہ کاروبار کو شدید نقصان پہنچا ہے ۔

اصل میں ہماری حج ادائیگیاں بھی سعودی عرب میں ہوٹلز کے پاس رکی ہوئی ہیں کیونکہ حج 2020 کے لئے ایڈوانس بکنگ کر دی گئی تھی

سائرہ کے مطابق وزیر اعظم کی جانب سے سرحدیں کھوللنے کے اعلان کے ساتھ ہی ان کے پاس معلومات کے لئے فون کالز آنا شروع ہو گئی تھیں ۔ وہ کہتی ہیں کہ پاکستانی اپنے ملک جانے اور اپنے پیاروں سے ملنے کے لئے بہت بے تاب ہیں۔

International travel expected to resume by Christmas
Australia eyes Christmas overseas travel
AAP

 سائرہ نے بتایا کہ بد قسمتی سے پاکستان جانے کے لئے ائرلانز کی تعداد محدود ہے اور ہوائی اداروں میں مقابلہ اورمسابقت نہ ہونے کی وجہ سے ٹکٹس کی قیمتیں زیادہ ہیں ۔ دوسری جانب ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ کیونکہ لوگ دو سالوں سے اپنوں سے نہیں ملے اس لئے ٹکٹس کی طلب بہت زیادہ ہے جو قیمتوں پر اثر انداز ہو رہی ہے ۔

سائرہ کا کہنا ہے کہ لوگ اللہ کے گھر جانے کے لئے بھی بہت خواہشمند ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ جیسے ہی سفر پر عائد پابندی کا خاتمہ ہو گا آسٹریلیا بھر سے حج اور عمرہ کے گروپ تیار کئے جائیں گے ۔

ادھر اسماء یاسر کا کہنا ہے کہ موجودہ حالات کے تناظر میں انہوں نے "فلیکسی ٹکٹ" کا چناو کیا ہے جس کے تحت سفر نہ کرنے یا ٹکٹ کینسل کروانے کی صورت میں انہیں انکی رقم واپس لوٹا دی جائیگی ۔

اسماء کا کہنا ہے کہ قبل از وقت ٹکٹ بک کرواتے ہوئے بہت غور و غوض ۤاور تحقیق سے کام لیا ۔

اسماء کہتی ہیں کہ آخری مرتبہ پاکستان 2018 میں گئے تھے اس کے بعد سے اب تک نہیں جا سکے ۔ نہ صرف ہم اپنے گھر والوں کو یاد کر رہے ہیں بلکہ گھر والے بھی ہمیں بہت یاد کر رہے ہیں ۔ آخر میں دعا کرتے ہوئے اسماء نے کہا کہ ہم اور جو لوگ بھی بین الاقوامی سفر کا ارادہ رکھتے ہیں دعا ہے کہ وہ عافیت سے سفر کریں بہ خیر و عافیت واپس آئیں۔

 


 

 

Coming up next

# TITLE RELEASED TIME MORE
مجھےگھر یاد آتا ہے ۔۔۔۔۔ سرحدیں کھلنے سے پہلے ہی ٹکٹ بک کروالیئے ہیں ۔ 10/10/2021 00:05 ...
SBS Urdu News 23 May 2022 23/05/2022 04:00 ...
Labor party ready to form the next Australian parliament after winning the 2022 election-Urdu News 22 May 2022 22/05/2022 10:30 ...
SBS Urdu News 20 May 2022 20/05/2022 04:00 ...
کیا تارکینِ وطن ووٹرز امیدوار کے بارے میں معلومات کر کے ووٹ ڈالتے ہیں؟ 19/05/2022 00:10 ...
ایس بی ایس اردو خبریں 19 مئی 2022 19/05/2022 04:23 ...
'فوٹی' کیا ہے؟ آسٹریلین کھیل کے بارے میں وہ سب کچھ جو آپ جاننا چاہتے ہیں 18/05/2022 22:00 ...
Judges asking Australian politicians to push for a federal integrity commission-Urdu News 18 May 2022 18/05/2022 10:05 ...
امیگرنٹ خواتین عملی سیاست سے دور کیوں 17/05/2022 15:07 ...
ایس بی ایس اردو خبریں 17 مئی 2022 17/05/2022 05:13 ...
View More