ابھی آنے والا ہے Sun 6:00 PM  AEST
ابھی آنے والا ہے شروع ہوگا 
Live
Urdu radio
ایس بی ایس اردو

ANZAC DAY دونوں ممالک کی قربت کا دن مگر کیا نیوزی لینڈ کبھی آسٹریلیین ریاست کا حصہ تھا؟

6 February 1840 more than 40 Māori chiefs signed a treaty with the British Crown in the Bay of Islands Source: National Museum of Australia

ANZAC DAY آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کی مشترکہ دفاعی جدوجہد کا مظہر ہے ۔ دونوں ممالک کی قربت کے باوجود یہ دلچسپ حقیقت کم لوگوں کو معلوم ہے کہ نیوزی لینڈ کبھی آسٹریلیین ریاست نیو ساؤتھ ویلز کا حصہ بھی تھا۔

آج کا نیوزی لینڈ ایک الگ آزاد ملک ہے اورپہلی جنگِ عظیم میں دونوں ممالک کے فوجی دیگر قومیتوں کے فوجیوں کے ساتھ  مشترکہ طور پر گیلیپولی (ترکی) کے محاذ پرلڑے تھے جنہیں اینزیک فوجی کہا جاتا ہے۔ کالونیل عہد میں ایک وقت ایسا بھی تھا جب نیوزی لینڈ آسٹریلیا کی موجودہ ریاست نیو ساؤتھ ویلز کی کالونی میں شامل تھا۔ نہ صرف یہ بلکہ آسٹریلیا کے آئین میں آج بھی نیوزی لینڈ کو آسٹریلیا میں شمولیت کی پیشکش شامل ہے۔

, from an engraving after a painting by J.A. Gilfillan, 19th century.
Capt. James Cook claiming what is now New South Wales, Australia, for Great Britain (1770).
https://www.britannica.com/biography/James-Cook

 نیوزی لینڈ کو باضابطہ طور پر نیو ساؤتھ ویلز کالونی کا حصہ بنا نے کا آغاز 1788 میں نیو ساؤتھ ویلز  کے گورنر آرتھر فلپ کے ایک اعلان کے ذریعے ہوا جس کے تحت اس وقت کی برطانوی کالونی نیو ساؤتھ ویلز کی سرحدی حدود کی توسیع کرتے ہوئے نیوزی لینڈ کے جزائیر کو بھی  نیو ساؤتھ ویلز کالونی کا حصہ قرار دے دیا گیا ۔

نوآبادیاتی تعلقات

آسٹریلیا کی ریاستیں جو اس وقت برطانوی کالونی تھیں اور نیوزی لینڈ کے جزیرے بھی برطانیہ کی نو آبادیاں  تھیں۔اس وقت کے نیو ساؤتھ ویلز میں مشرقی آسٹریلیا کے علاقوں کے ساتھ  نیوزی لینڈ بھی شامل تھا۔ نیوزی لینڈ کے آبائی باشندے ماوری قبائیل  ٹرانس تسمان تعلقات کی تشکیل میں شروع سے شامل تھے۔ ماوری قبیلوں کے سرداروں نے 1814 میں آسٹریلیا سے پہلے مشنری وفود کو مدعو کیا اور 1834 میں نیوزی لینڈ کے پہلے جھنڈے کا انتخاب کیا تاکہ وہ سمندری نظام چلا سکیں اور نیو ساؤتھ ویلز کے ساتھ تجارت کر سکیں۔

 علاقائی پس منظر اور ابتدائی تسمان ایسوسی ایشن

 گورنر فلپ اور ان کے جانشینوں نے شروع میں آسٹریلیا کی جغرافیائی حدود کی تعریف مبہم رکھی جس سے یہ واضع نہیں تھا کہ  نیوزی لینڈ ان حدود میں شامل ہے یا نہیں کیا مگر الگ ریاست قرار نہ دئے جانے کے باعث نیوزی لینڈ کو غیر اعلانیہ طور پر آسٹریلیا میں ہی شامل سمجھا جاتا تھا۔

 نیو ساؤتھ ویلز کے گورنرز نے تسمان بھر میں اقتصادی اور ثقافتی سرگرمیوں کی حوصلہ افزائی کی جن میں چرچ مشنری سوسائٹی کی خطے میں موجودگی کی حوصلہ افزائیاور نیوزی لینڈ کے پہلے جسٹس آف دی پیس تھامس کینڈل کا 1814 میں تقرر  شامل تھا۔ تاہم نیوزی لینڈ کی قانونی حیثیت پر اس وقت بھی بحث جاری تھی۔ مثال کے طور پر،یہ سوال پوچھا جاتا تھا کہ کیا نیو ساؤتھ ویلز کا قانون بحیرہ تسمان میں ہونے والے جرائم پر لاگو ہوتا ہے؟

 اسی دوران  برطانوی آباد کاروں کی ایک بڑی آمد کے باعث ان کو بسانے کے لئے نئی سرزمین کی ضرورت بڑھنے لگی اور آخر کار 1838 میں ہاؤس آف لارڈز کی ایک کمیٹی نے سلطنتِ برطانیہ کی نئی نوآبادیاتی املاک میں توسیع کی سفارش کی۔

:نیوزی لینڈ کا نیو ساؤتھ ویلز کے ساتھ سرکاری الحاق کے اعلان نامے میں کہا گیا

بحرالکاہل میں جزائر کے اس گروپ کے اندر، جسے عام طور پر نیوزی لینڈ کہا جاتا ہے، کوئی بھی علاقہ جو حکومتِ برطانیہ کے تسلط میں ہے اسے  برطانوی کالونی نیو ساؤتھ ویلز کا حصہ سمجھا جائے گا

اس اعلان سے رائل نیوی کے نئے تعینات ہونے والے قونصل، کیپٹن ولیم ہوبسن کے لیے ماوری رضامندی سے جزائر کی خودمختاری حاصل کرنے کی راہ ہموار ہوئی۔  ادھر ہوبسن کے نیوزی لینڈ پہنچ کر ماوری سربراہ سے بات کرنے سے پہلے ہی انہیں ملک کا لیفٹیننٹ گورنر مقرر کر دیا گیا۔  نیوزی لینڈ کے راستے میں نئے گورنر جنرل ہوبسن نے  نیو ساؤتھ ویلز کے گورنر سر جارج گپس سے ملاقات کر کے نہ صرف ان سے عہدے کا حلف لیا  بلکہ  نیو ساؤتھ ویلز کے گورنر کا دائرہ اختیارکو سرکاری طور پر نیوزی لینڈ تک بڑھانے کا باقاعدہ اعلان بھی جاری کردیا۔  یوں نیو ساؤتھ ویلز کے گورنر کادائیرہ اختیار نیوزی لینڈ تک پھیل گیا۔

 

ویتنگی کا معاہدہ جس سے نیوزی لینڈ پر برطانیہ کے قبضے کی راہ ہموار ہوئی
 چھ  فروری 1840 کو 40 سے زیادہ ماوری سرداروں نے گورنر جنرل اور گورنر کے ساتھ ویتنگی کے امن معاہدے پر دستخط کیے۔ جس سے 21 مئی 1840 کو ان موری نیم آزاد علاقوں پر جنیں  نیوزی لینڈ کہا گیا تھا ان پر برطانوی خودمختاری کی ابتدا ہوئی۔

ایک ماہ سے بھی کم عرصے کے بعد، 16 جون 1840 کو، نیو ساؤتھ ویلز کی قانون ساز کونسل نے کالونی کے قوانین کو نیوزی لینڈ تک توسیع دینے کے ساتھ ساتھ عدالتوں اور کسٹم ڈیوٹی کے قیام کا ایکٹ پاس کیا۔

“ANZAC” was the name given to a combined force of First Australian Imperial Force and New Zealand Army troops who landed on Turkey’s Gallipoli Peninsula at around dawn on Sunday, the 25th day of April, 1915, barely nine months after the outbreak of World
New Zealand was administered as part of New South Wales until 3 May 1841 when it became a colony in its own right.
https://anzacday.org.au/
New Zealand was one of the colonies asked to join in the creation of the Commonwealth of Australia law still provided for New Zealand to be one of the potential stat
Constitutionally New Zealand began as an extension of the colony of New South Wales, which was its status when the Treaty of Waitangi was signed in 1840.
Wikepedia

نیوزی لینڈ
تاہم، خیال تھا کہ یہ صرف ایک عارضی انتظام ہوگا۔ نیوزی لینڈ کی کالونی کی تعمیر کا چارٹر 16 نومبر 1840 کو جاری کیا گیا تھا۔اور اس بار اس میں کہا گیا تھا کہ نیوزی لینڈ 1 جولائی 1841 سے نیو ساؤتھ ویلز کا حصہ نہیں رہے گا۔

آئینی طور پر 1840میں نیوزی لینڈ  کو نیو ساؤتھ ویلز کی کالونی کی توسیع کے طور پراس میں شامل رکھا گیا مگر 1841 میں نیوزی لینڈ ایک الگ کالونی بن گیا۔

 گورنر جنرل ہوبسن نیوزی لینڈ کے پہلے گورنر بنے لیکن 10 ستمبر 1842 کو عہدے پر رہتے ہوئے انتقال کر گئے۔

نیوزی لینڈ اور آسٹریلیا کا آئین

1890 کی دہائی میں نیوزی لینڈ کو آسٹریلیا کی آئندہ فیڈریشن میں شامل ہونے کی دعوت دی گئی۔ نیوزی لینڈ کے وزیر اعظم رچرڈ سیڈن نے 1900 میں ایک رائل کمیشن بلایا۔

کمیشن نے رپورٹ میں لکھا کہ  آسٹریلیا اور نیوزی لینڈ کے درمیان تقریباً بارہ سو میل کا سمندرہے۔  نیوزی لینڈ کی دولت مشترکہ میں شمولیت کے خلاف ایک اہم وجہ ہے اس لئے نیوزی لینڈ آسٹریلیا میں شامل نہیں ہو سکتا۔

آسٹریلیا کے آئین میں اب بھی ایک شق موجود ہے جو نیوزی لینڈ کو آسٹریلیا کے ساتھ الحاق کی اجازت دیتی ہے

Each year on Anzac Day, New Zealanders (and Australians) mark the anniversary of the Gallipoli landings of 25 April 1915.
To most Australians ANZAC Day is a very special day in the year The letters stand for Australian and New Zealand Army Corps۔
https://anzacday.org.au/

  اپریل  ۲۰۱۵ میں اینزیک کی صدسالہ تقریبات منائی گئیں۔

 اس مضمون کے لئے مواد نیشنل میوزیم آسٹریلیا , انسائیکلوپیڈیا آف نیوزی لینڈ ، ویکی پیڈیا اور اینزیک ڈے یادگاری کمیٹی  سے لیا گیا*


 

 

Coming up next

# TITLE RELEASED TIME MORE
ANZAC DAY دونوں ممالک کی قربت کا دن مگر کیا نیوزی لینڈ کبھی آسٹریلیین ریاست کا حصہ تھا؟ 23/04/2022 05:30 ...
حالاتِ حاضرہ ۔ وزیراعلیٰ پنجاب کے انتخاب کے لئے ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا حکم اور اتحادی جماعتیں شہباز شریف سے غیر مطمئین کیوں؟ 30/06/2022 00:09 ...
ماڈرن آسٹریلیا کی نمائندہ، کمیونیکیشن منسٹر مشیل رولینڈ سے ایک ملاقات 29/06/2022 15:16 ...
پاکستان ہائی کمیشن کا مینگو فیسٹول ، پاکستان آسٹریلیا کے مابین سفارتی تعلقات کے 75 سال مکمل 29/06/2022 07:56 ...
پاکستان آسٹریلیا سے پچز درآمد نہیں کررہا : اسپورٹس راونڈ اپ 26/06/2022 09:53 ...
پاکستان کے نوجوان فلمساز بنے آسٹریلیا میں نیو یارک فلم اکیڈمی کے مہمان 25/06/2022 29:08 ...
حکومت نے بجلی کی بلا تعطل فراہمی کا پلان تیار کر لیا 21/06/2022 15:05 ...
تارک وطن افراد " ٹیف " سے کیسے فائدہ اٹھائیں 21/06/2022 09:48 ...
ابھی تو بس وارم اپ ہوا ہے: پاور ومن اپنی شاندار فتح کے بعد مزید سنسنی خیز مقابلوں کیلیے پرعزم 20/06/2022 45:14 ...
میلبرن میں منعقد فیکا کا آنکھوں دیکھا احوال 18/06/2022 11:01 ...
View More